nazam

کوئی۔۔۔۔۔

کوئی… مجھ سے اگر پوچھے کہ تم بچھڑے بھلا کیسے اسے کیا زعم تھا آخر…؟ جو پل میں راستے بدلے کہ منزل کے قریب ہو کر پلٹنا کیوں پڑا تم کو……؟ یوں تنہائی کے صحرا میں بھٹکنا کیوں پڑا تم کو….؟ مرے دل نے نجانے کیوں ؟ یہ چھوٹی سی …

Read More »

December Poetry

آخری چند دن دسمبر کےہر برس ہی گراں گزرتے ہیںخواہشوں کے نگار خانے میںکیسے کیسے گماں گزرتے ہیںرفتگاں کےبکھرتے سالوں کیایک محفل سی دل میں سجتی ہےفون کی ڈائری کے صفحوں سےکتنے نمبر پکارتے ہیں مجھےجن سے مربوط بے نوا گھنٹیاب فقط میرے دل میں بجتی ہےکس قدر پیارے پیارے …

Read More »

December

دسمبر  کتنا مشکل ہے صبر کرنا نہ کوئی جینا نہ کوئی مرنا تم کو یاد ہے ؟ وہ شام فرقت میں نے رو کر تمہیں کہا تھا کہیں بھی جانا کہیں بھی رہنا  مگر دسمبر کی سرد راتوں میں لوٹ آنا نہیں نہ آئے ٹھہر ٹھہر کر ہر ایک لمحہ …

Read More »

پھر یوں ہوا کہ

پھر یوں ہوا کہ وقت کے تیور بدل گئے پھر یوں ہوا کہ راستے یکسر بدل گئےپھر یوں ہوا کہ منزلیں دشوار ہو گئیںپھر یوں ہوا کہ خواہشیں مسمار ہو گئیںپھر یوں ہوا کہ حشر کے سامان ہو گئےپھر یوں ہوا کہ شہر بیابان ہو گئےپھر یوں ہوا کہ گرد …

Read More »

Mid night of December

!!!!!! مڈ نائٹ آف دسمبر !!!!!!سدا عشّاق کی بستی میں ہے شدّاد دسمبر کبھی اُحد کبھی کوفہ کبھی بغداددسمبر یہ خون_دل جلانے میں کئی کشتوں کا ماہر ہے وراثت میں چنگیزی ہے کئی پشتوں کاماہر ہے خواہش غصب کرتا ہے دلوں میںدہشت گردی سے مزہ لیتا ہے لوگوں کا عجب …

Read More »

Mery masehiah

☆میرے مسیحا☆                            میرے مسیحا سے جاکے کہ دو کہ دم بہ لب ہے قرارِ ہستی کہ جاں‌گسل انتظار تیرا کہو کہ مہمان رہ گیا ہے بس ایک پل کا بیمار تیرا میرے مسیحا تیرے سفر میں ہوئی …

Read More »

Sad Urdu Nazam

وقت کے شکنجوں نے خواہشوں کے پھولوں کو نوچ نوچ توڑا ہے کیا یہ ظلم تھوڑا ہے ؟ درد کے جزیروں نے آرزو کے جیون کو مقبروں میں ڈالا ہے ظلمتوں کے ڈیرے ہیں لوگ سب لٹیرے ہیں سکون روٹھ بیٹھا ہے ذات ریزہ ریزہ ہے تار تار دامن ہے …

Read More »

December

دسمبر چل پڑا گهر سے سنا ہے پہنچنے کو ہے مگر اس بار کچهہ یوں ہے کہ میں ملنا نہیں چاہتا ستمگر سے میرا مطلب— دسمبر سے کبهی آزردہ کرتا تها مجهے جاتا دسمبر بهی مگر اب کے برس ہمدم بہت ہی خوف آتا ہے مجهے آتے دسمبر سے دسمبر …

Read More »

Jaun Elia

“شاید” میں شاید تم کو یکسر بھولنے والا ہوں شاید’ جانِ جاں شاید کہ اب تم مجھ کو پہلے سے زیادہ یاد آتی ہو ہے دل غمگیں’ بہت غمگیں کہ اب تم یاد دل وارانہ آتی ہو۔ شمیمِ دُور ماندہ ہو بہت رنجیدہ ہو مجھ سے مگر پھر بھی مشامِ …

Read More »

Usay kehna!!!! Qasam lay lo

اسے کہنا !!! قسم لے لو  تمہارے بعد جو ہم نے  کسی کا خواب دیکھا ہو  کسی کو ہم نے چاہا ہو  کسی کو ہم نے سوچا ہو  کسی کی آر زو کی ہو  کسی کی جستجو کی ہو  کسی کی راہ دیکھی ہو  اسے کہنا !!! قسم لے لو  …

Read More »